Poetry

آنکھ میں آنکھ ڈال دیکھا ہے
میں نے سارا جمال دیکھا ہے۔

تیری یاد کے ایک لحظے میں
میں نے گزرتا سال دیکھا ہے

کوئی اس کے سیوا نہ رہتا ہو۔
یو ایس ایس نے دل تک نکال دیکھا ہے۔

میں ہوں، تم ہو اور دھیر باتیں ہیں۔
کتنا اچھا خیال دیکھا ہے۔

صدا رہنا نہیں یہ تخت اے تاج
عروج نے بھی ذوال دیکھا ہے۔

You Might Like This

Poetry

نہ جانے روٹھ کے بیٹھا ہے دل کا چین کہاںملے...

Read More

Poetry

بعد اُس کے غمِ ہجر میں, شریکِ غم کوئی نا...

Read More

Poetry

آنکھ میں آنکھ ڈال دیکھا ہےمیں نے سارا جمال دیکھا...

Read More
funny jokes

Funny joke

سردار جی کا نہایت خطرناک آپریشن ہونا تھا جب انہیں...

Read More

Leave a Reply